Tuesday, November 20, 2012

عدنان کی ڈائری: شمالی وزیرستان میں گزرتے دن

اسلام و علیکم 

شمالی وزیرستان سے بھیجے گئے بلال خان محسود کے پیغامات کو فلحال یہاں نہی  جا رہا ہے جس کی وجہہ یہ ہے کے کچھ دوست اور پڑھنے والے شاید یہ سمجھ رہی ہیں کہ ہم (ٹیم آشیانہ) بلال محسود کے پیغامات کو اپنے لئے فنڈز جمع کرنے کے لئے استعمال کرنا چاہ رہے  ہیں. جبکہ حقیقت حال کچھ  الگ ہے. ہم نے صرف شمالی وزیرستان کے بچوں کی سوچ وفکر اور شمالی وزیرستان کے زمینی حقائق کو منظرعام پر لانے کی غرض سے بلال محسود کے پیغامات کو یہاں جگہ دینا شرو کری تھی. بلال محسود آشیانہ کیمپ شمالی وزیرستان میں موجود ہے اور کیمپ کے ساتھیوں کے ساتھ فلاحی کاموں میں حصہ لے رہا ہے. ساتھ ساتھ کیمپ میں قائم اسکول / مدرسہ مے جو بھی پڑھایا جا سکتا ہے پڑھ رہا ہے. بلال محسود اور اس کے بہت سارے دوست امن پسند اور پاکستان کو سمجھنے لگے ہیں. انشا الله بلال محسود کے پیغامات کو بہت جلد یہاں لکھنا شرو کر دیا جاۓ گا. 

جیسا کے آپ کے علم مے ہے، شمالی وزیرستان میں فلاحی کاموں میں مصروف ٹیم آشیانہ کے کچھ کارکنان عدنان بھائی کے ہمراہ یہاں پشاور آئے ہوۓ ہیں. عدنان بھائی بھیک مشن میں مصروف ہیں اور ہم کچھ مقامی کارکنان اپنے طور پر ان ساتھیوں کی مدد کرنے کی کوشش کررہے ہیں، الله پاک ہماری اس محنت اور ٹیم آشیانہ کے کارکنان کے کاموں میں برکت فرماۓ - آمین.

کراچی اور لاہور سے ہمارے دوستوں اور ساتھیوں نے پیغام بھیجا ہے کہ وہ بھی اپنے اپنے شہروں میں بھیک مشن کے تحت شمالی وزیرستان کے پریشان حال، مجبور اور بے بس بھائی، بہنوں اور بچوں کے لئے سامان جمع کررہے ہیں اور بہت جلد کچھ ساتھی جمع کے گئے سامان کے ساتھ شمالی وزیرستان میں موجود ہونگے.

ہماری عزیز بہن سیدہ فریال زہرہ جو کہ کینیڈا سے یہاں تشریف لائیں تھی اب واپس کینیڈا پہنچ چکی ہیں اور ان کا پیغام بھی ہم کو ملا ہے کہ وو بھی اپنے دوستوں اور ساتھیوں کے ساتھ مل کر یہاں (شمالی وزیرستان) کے لوگوں کے لئے امداد جمع کرنے کی کوشش کر رہی ہیں. الله پاک ہمت، صبر، حوصلہ اور استقامت عطا فرماۓ - آمین.

عدنان بھائی خود بھی بہت اچھا لکھنے والے ہیں اور گزشتہ رات جب ہماری ان سے بات ہوئی تو انہوں نے ہم کو اپنی ڈائری کے کچھ صفحات دکھاۓ. ہم نے عدنان بھائی سے بہت درخواست کری کہ ہم کو ان صفحات میں سے کچھ صفحات کو دوسرے ساتھیوں  اور پڑھنے والوں کے سامنے پیش کرنے دیں تو بہت مشکل سے کچھ صفحات کو لکھنے اور آپ سب کے سامنے رکھنے کی اجازت ملی ہے. 

ہم عدنان بھائی کی ڈائری کے صفحات کو لکھ رہے ہیں اور قابل ذکر باتیں آپ سب کے سامنے ضرور رکھیں گے. ان صفحات کو پڑھ کر  ہم سب کو شمالی وزیرستان اور وہاں کے لوگوں کے ذہن، فکر حالات اور ٹیم آشیانہ کی کارکردگی کے بارے میں بھی بہتر اندازہ ہو سکے گا. 

کراچی سے ہمارے کچھ دوست ایک، دو (١،٢) دن میں کچھ امدادی سامان کے ساتھ یہاں پہنچنے والے ہیں جن میں عدنان بھائی کے بہت قریبی دوست اور ساتھ احمد بھائی بھی شامل ہونگیں. احمد بھائی کہ یہاں آنے سے ٹیم آشیانہ کو بہت بڑی ڈھارس میل گی. کیونکہ وہ (احمد بھائی) بچوں کی نفسیات کو بہت اچھی طرح سمجھتے ہیں اور شمالی وزیرستان کے بچوں میں بہت اچھی طرح گھل مل جاتے ہیں. الله پاک احمد بھائی اور دیگر ساتھیوں کے سفر کو آسان فرماۓ اور ان کے اندر خدمات انسانیت کے جذبے کو ہمیشہ کی طرح  موجود رکھے.

انشا الله آج سے ہی عدنان بھائی کی ڈائری کو لکھنے کا کام شروع کر دیا جاۓ گا اور ہم کو امید ہے کہ آپ اس ڈائری کو پڑھ کر شمالی وزیرستان کے حالت اور معملات  کو بہتر سے بہتر سمجھ سکیں گیں.

 ٹیم آشیانہ برائے شمالی وزیرستان اور عدنان بھائی کی ہدایات کے مطابق یہ صفحہ (بلاگ) اب صرف اور صرف ٹیم آشیانہ کے معملات، فلاحی خدمات، امداد کی تفصیلات اور دیگر کے لئے استعمال کیا جاۓ گا،  وزیرستان کی ڈائری کے لئے وزیرستان ڈائری کا لنک (صفحہ) بلاگ استعمال کیا جاۓ گا جو درج ذیل ہے:

ڈائری کے بارے میں معلومات حاصل کرنے کے لئے آپ ہم سے درج ذیل رابطہ کر سکتے ہیں .
waziristan.dairy@gmail.com

جزاک الله خیر 
ساتھ کارکن 
ٹیم آشیانہ برائے شمالی وزیرستان.

Sunday, November 18, 2012

عدنان بھائی بھیک مشن کے میں پشاور میں

 محترم دوستوں اور ساتھیوں
 اسلام و علیکم 

الله پاک کے فضل و کرم سے ٹیم آشیانہ برائے شمالی وزیرستان کے کچھ کارکنان اور ساتھ عدنان بھائی کے ہمراہ اب سے کچھ دیر قبل یہاں (پشاور) پہنچ چکے ہیں، عدنان بھائی اور ایک کارکن اسلم بھائی کی طبیعت کچھ ناساز ہے. جبکہ باقی ساتھی بھی سفر کی تھکن کا شکار ہیں. 
عدنان بھائی اور دیگر ساتھی انشا الله کل (بروز پیر، ١٩ نومبر ٢٠١٢) سے یہاں (پشاور) میں شمالی وزیرستان میں جاری فلاحی کاموں کی مدد کے لئے بھیک مشن کا آغاز کر رہے ہیں جبکہ دیگر شہروں میں موجود مقامی ساتھی اور دوست بھی بھیک مشن کا آغاز کریں گے. 

ہم اپنے تمام دوستوں اور ساتھیوں سے بھیک مشن میں حصہ لینے کی درخواست کرتے ہیں اور امید کرتے ہیں کہ ہم اپنے وزیرستانی بھائی بہنوں اور بچوں کہ لئے کچھ امداد جمع کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے. انشا الله.

یہاں ہم ایک دفع پھر سے اپنے تمام دوستوں، اور پڑھنے والوں کو بتاتے چلیں کہ آشیانہ کیمپ شمالی وزیرستان میں موجود ١٠٠ سے زائد بچوں، خواتین اور بزرگوں کے ساتھ ساتھ ٹیم آشیانہ کے کارکنان بھی شدید مشکلات کا شکار ہیں. کیمپ میں غذائی اجناس کی شدید  قلت ہے.جبکہ ادویات بھی موجود نہیں ہیں. سرد موسم کی وجہہ سے مشکلات میں اور اضافہ ہو  گیا ہے.

ہم تمام دوستوں اور ساتھیوں سے بھرپور مدد کی اپیل کرتے ہیں. 

عدنان بھائی سے رابطے کے لئے:
00923452971618
s_adnan_ali_naqvi@yahoo.ca
team.ashiyana@gmail.com

جزاک الله خیر 
کارکنان 
ٹیم آشیانہ - پشاور.


Saturday, November 17, 2012

فوری مدد کی اپیل اور درخواست

محترم دوستوں اور ساتھیوں 
اسلام و علیکم 

آشیانہ کیمپ شمالی وزیرستان اس وقت بد ترین حالات کا شکار ہے، یہاں غذائی اجناس کی شدید قلت ہو گئی ہے. شدید سردی کی وجھہ سے بہت لوگ مختلف بیماریوں کا شکار ہو چکے ہیں جن کے لئے ادویات میسر نہی ہیں. گرم کپڑوں کی اشد ضرورت ہے. ہم آپ سب سے انسانیت کے نام پر اپیل کرتے ہیں کہ ہماری مدد کریں قبل اس کے کہ بہت دیر ہو جاۓ. یہاں ہزاروں لوگ در بدر پھر رہی ہیں کہ شاید کہی سے کچھ مل جاۓ. 

عدنان بھائی اور ٹیم آشیانہ کے دیگر اراکین بہت جلد بھیک مشن شروع کر رہے ہیں جس میں آپ سب کی رہنمائی اور مدد کی اشد ضرورت ہے.
الله پاک جزاۓ خیر عطا فرماۓ.
ٹیم آشیانہ شمالی وزیرستان 
دتہ خیل.

رابطہ کرنے کے لئے:
آشیانہ کیمپ، دتہ خیل، شمالی وزیرستان.

s_adnan_ali_naqvi@yahoo.ca
team.ashiyana@gmail.com
00923452971618

Sister Faryal Zehra back to Canada

محترم دوستوں اور ساتھیوں 
اسلام و علیکم 
ہماری عزیز بہن اور ٹیم آشیانہ کی کارکن، سیدہ فریال زہرہ واپس کینیڈا جا چکی ہیں. الله پاک ان کی انسانیت کی خدمات کو قبول فرماۓ اور بہن فریال کی مشکلات کو ختم فرماۓ.

بہن فریال کا ایمیل آئ ڈی ہیک ہو چکا ہے جس کی وجھہ سے بہن فریال فیس بک پر اپنا اکاونٹ نہی کھول پا رہی ہے. 
تمام دوست ان سے ان لنکس پر رابطہ کر سکتے ہیں 

 http://www.linkedin.com/pub/faryal-zehra/34/363/a1b
https://twitter.com/F4Faryal

اگر کوئی دوست یا ساتھی ان کی مدد کرنا چاہے تو ان سے رابطہ کریں 

faryal.zehra@gmail.com

جزاک الله 
اسلام و علیکم

Thursday, November 15, 2012

شمالی وزیرستان: آشیانہ کیمپ، دتہ خیل. کے حالات اور ٹیم آشیانہ

محترم دوستوں اور ساتھیوں 
اسلام و علیکم 

ٹیم آشیانہ، دتہ خیل، شمالی وزیرستان کی جانب سے تمام کارکنان، دوستوں، ساتھیوں اور پڑھنے والوں تمام بھائی اور بہنوں کا بہت بہت شکریہ کہ آپ سبھی نے ہمارا (ٹیم آشیانہ) کا ہمیشہ بہت ساتھ دیا اور ہر مشکل وقت میں ہمارے ساتھ موجود رہے. ہم اور کچھ نہیں مگر یہ دعا ضرور کر سکتے ہیں کہ الله پاک آپ سب کو عزت عطا فرماۓ اور اس دنیا اور آخرت میں سرخرو فرماۓ - آمین. آپ کی محنت، خدمت، جذبے اور مدد کا اجر صرف اور صرف الله پاک ہی آپ کو عطا کر سکتا ہے. الله پاک آپ کو اجر عظیم عطا فرماۓ - آمین.

"اور الله ہی تو ہے جو جس کو چاہے عزت سے نوازے اور جو چاہے اس کو ذلت دے."  

محترم دوستوں اور ساتھیوں، 
گزشتہ برسوں سے میں (عدنان) اور میرے ساتھی مستقل مزاجی اور ہر طرح کے مشکل و آسان حالات سے نبرد آزما ہوتے ہوۓ یہاں (شمالی وزیرستان) کے پریشان حال، بھوک و افلاس، مشکلات میں گھرے ہوۓ وزیرستانی بھائی، بہنوں کے لئے فلاحی خدمات کا سفر جاری رکھے ہوۓ ہیں، الله پاک کے فضل و کرم سے ہر طرح کے مشکل ترین حالات کا سامنا کرتے ہوۓ ہم اگر کچھ زیادہ نہی کر سکے تو کم از کم یہاں کے لوگوں کے ہمراہ ضرور موجود رہے ہیں. الله پاک میرے دوستوں، ساتھیوں، کارکنان، ہمارے گھر والوں کی خدمات کو قبول فرماۓ. اور ہم کو مزید خدمات کرنے کی توفیق اور ہمت و حوصلہ عطا فرماۓ - آمین. 

محترم دوستوں اور ساتھیوں، 
یہاں (شمالی وزیرستان) کے حالات اور یہاں کے لوگوں کی حالت کے بارے میں اور کیا بتاؤں؟ اکثر آپ لوگوں کو آگاہ کرتا رہتا ہوں، کہ یہاں کے لوگ کس طرح کے مصائب و آلام کا شکار ہیں. کبھی کبھی دو (٢) وقت کی روٹی اور ایک وقت کی دوا (ادویات) تک میسر نہیں ہوتی. کبھی کبھی حالات اس حد تک خراب ہو جاتے ہیں کے مرنے والے لوگوں کے لئے کفن تک میسر نہیں ہوتا. میں (عدنان) اکثر آپ کو یہاں کے حالت کے بارے میں آگاہی دینے کی پوری کوشش کرتا رہتا ہوں.  

عزیز دوستوں اور ساتھیوں،
میں ہمیشہ سے ایک بات کہتا رہا ہوں، میرا کسی بھی فلاحی کام کا مقصد اپنی خود کی رونمائی، تشہیر نہیں نہ ہی میرے دوستوں میں سے کوئی ایسا چاہتا ہے. ہم صرف اور صرف فلاح انسانیت کی غرض سے اپنے گھروں سے نکلے ہیں، ایک مستحکم پاکستان اور اسلام کا سہی تصور پیش کرنے کے لئے یہاں موجود ہیں. میں (عدنان)  بھی اگر دوسرے لوگوں کی طرح چاہتا تو اپنی ان فلاحی خدمات کو بہت اچھی طرح کیش کروا سکتا تھا، میڈیا اور دیگر طریقوں سے میرے پاس بھی دنیا کے سامنے پیش کرنے کے لئے بہت کچھ موجود ہے. یہاں کے لوگوں کی سچی کہانیاں، یہاں کھ حالات و واقعات کے بارے میں سچائی سے قریب تر باتیں، یہاں غربت، بھوک، افلاس، بغیر علاج و معالجے سے مرتے ہوۓ لوگوں کی تصاویر، ڈرون حملوں کی کہانیاں، یہاں پر طاقتور لوگوں کے مظالم، مظلوموں کی اہیں اور سسکیاں وغیرہ وغیرہ، بہت کچھ ہے میرے پاس دنیا کو دکھانے اور اپنی وہ وہ کروانے کے لئے. مگر میرا رب (الله پاک) اور میرا نبی، اور میرا مذہب اور میری اخلاقی اقدار، میری تہذیب اور سب سے بڑھ کر میرے اندر کا انسان نے مجھ کو یہ سب کرنے سے روکے رکھا ہے. یہاں (بلاگ تک) یا ایس ایم ایس پیغام تک، یا فون / ایمیل سے رابطے تک  ہم وہی بتاتے ہیں جن کی اجازت مجھ کو میرا ضمیر اور میرے ساتھ دیتے ہیں. ہمارا مقصد خود کو یا یہاں کہ لوگوں کو خبر بنانا نہیں ہے بلکے یہاں کے لوگوں کی داد رسی کرنا ہے. ہم بس اتنا چاہتے ہیں کے جو کام میں (عدنان) اور میرے ساتھ (ٹیم آشیانہ) اپنے کمزور و محدود وسائل کی وجہہ سے نہیں کر پا رہے ہیں وہ کام یہاں سارا پاکستان کی بڑی بڑی نامی گرامی فلاحی ادارے آکر کریں. پاکستان اور سری دنیا سے مخیر خواتین و حضرات یہاں کہ لوگوں کے لئے مدد کریں تاکہ ہم سب مل کر یہاں کے لوگوں کو پرامن بنا سکیں، یہاں کے لوگوں پر دہشت گردی، انتہا پسندی اور شدت پسندی کا جو داغ لگا ہے اس کو دھو سکیں. 

محترم دوستوں اور ساتھیوں، 
میں (عدنان) جب سے یہاں آیا ہوں ایک سبق سیکھا ہے اور وہ سبق یہ ہے کہ یہاں کے لوگ بھی انسان ہیں، اور اگر ہم سب مل کر تھوڑی سی محنت کریں، تو یہاں کے لوگ بھی دنیا کی دیگر اقوام کی طرح صلح پسند، امن پسند اور انسان دوست ہو سکتے ہیں. 
میرے بہت سے ساتھ اور دوست مجھ سے خفا ہیں، مجھ سے ناراض ہیں کے میں آخر کبھہ تک یہاں (شمالی وزیرستان) میں موجود رہوں گا؟ کب تک میں اپنی خود کی اور دوسرے دوستوں کی زندگی کو خطروں میں ڈالتا رہوں گا؟ کابھ تک ہم لوگوں اور دنیا والوں کے سامنے بھیک مانگتے رہیں گے؟ کب تک یہ فلاحی مشن ختم ہوگا؟  میرا ہر دفع اور اس دفع بھی یہی جواب ہے کہ کوئی میرا ساتھ دے یا نہ دے، میری مدد کرے یا نہ کرے ہمسفر بنے یا نہ بنے میں یہاں موجود رہوں گا. یہاں کے لوگوں کے غم اور دکھ کا ساتھ رہوں گا. آشیانہ کیمپ چاہے کتنی ہی دافع اجڑے یا آباد رہے، میں یہاں کے لوگوں کے ہمراہ رہوں گا. میرا یہاں کے لوگوں سے کوئی خون کا رشتہ نہیں، مگر میں ایک مسلمان ہوں این انسان ہوں اور میرے رب نے مجھ کو حکم دیا ہے کے میں انسانیت کی خدمات اپنی بساط کے مطابق سر انجام دیتا رہوں اور انشا الله جتنی ہمت اور توفیق الله پاک نے مجھ کو دے رکھی ہے اس کے مطابق کام کرتا رہوں گا.

دوستوں، یہ سچ ہے کا آج میرے پاس کچھ نہی صرف ایک جذبہ ہے. الله پاک کی دی ہوئی ہمت ہے. میرے پاس آج نہ ہی فنڈز ہیں نہ ہی غذائی اجناس نہ ہی ادویات، مگر میرے پاس الله پاک کا دیا ہوا صبر اور استقامت ہے. اور میرا ایمان ہے کے میرا الله میری مدد ضرور کرے گا، میری ہمت اور حوصلے کو اور بڑھائے گا، اور غیب سے میری اور یہاں کے لوگوں کی مدد کے لئے اسباب مہیا کرے گا - انشا الله.

میری عزیز بہن جو ہمیشہ میرا ساتھ دیتی رہی ہے، واپس کینیڈا چلی گئی ہے اور مجھ کو پیغم بھیجا ہے کہ وہ اپنی پوری کوشش کاری گی کہ یہاں کے لوگوں کے لئے مدد کرے، میرے عزیز دوست اور ساتھی، منصور بھائی، فیصل بھائی، جاوید بھائی، ندیم بھائی اور دوسرے ساتھ بھی مجھ سے رابطے میں ہیں، منصور بھائی اور احمد بھائی نے وعدہ  کیا ہے کہ بہت جلد اپنی گھریلو اور دفتری مصروفیت سے  لے کر ایک دفع پھر ٹیم آشیانہ شمالی وزیرستان کا حصہ بنیں گے. اور ہم سب مل کر بہت کچھ نہی تو تھوڑا تو کر سکیں گے. 

آخر میں یہ بتانا بہت ضروری ہے کہ آشیانہ کیمپ کے کیا حالات ہیں؟ یہاں مقیم لوگوں پر کیا گزر رہی ہے؟ اور میں یہاں کیا کر رہا ہوں؟

گزشتہ ایک ہفتے (٩ نومبر ٢٠١٢ تاحال) سے آشیانہ کیمپ میں غذائی اجناس ختم ہو چکی ہیں، جس کی وجہہ سے دو وقت کے کھانے کا سلسلہ روکا ہوا ہے. ادویات موجود نہیں. گزشتہ ماہ بھیک مشن سے جمع کے گئے اور خریدے گئی اشیاء میں سے اکثر ختم ہو چکی ہیں، بچوں اور خواتین کے لئے گرم کپڑے موجود نہیں ہیں. اسس کے علاوہ پینے کے صاف پانی کی بہت پریشانی ہے. سردی اور سرد موسم کی وجہہ سے یہاں کے لوگوں میں طرح طرح کی بیماریاں پیدا ہو رہی ہیں جن کا علاج کرنے کے لئے نہ ہی ادویات ہیں اور نہ ہی ڈاکٹر کی سہولت

میں (عدنان) میرے مقامی ساتھی، اور آشیانہ کیمپ میں مقیم لوگ غذائی قلت کا شکار ہیں. اور بہت مشکل سے یہاں وہاں سے مانگ کر ایک وقت کھانے کا انتظام کر پا رہے ہیں. میں یا میرے ساتھ زیادہ دن تک اسس صورت حال کو نہیں سمبھال سکیں گے. ان حالات کو دیکھتے ہوۓ تو یہی دل کرتا ہے کے سب کچھ چھوڑ چھاڑ کر کچھ دنوں کے لئے کراچی چلا جاؤں، مگر یہاں کے لوگوں میں میرے اور پاکستان کے لوگوں کے لئے کیا جذبات پیدا ہونگے یہ سوچنا بھی میرے لئے بہت مشکل ہے. 

میری ایک دفع پھر ٹیم آشیانہ کے پرانے ساتھیوں، میرے دوستوں، میرے گھر والوں، میرے وو دوست جو ہمیشہ سے ہماری مدد کرتے رہے ہیں سے اپیل ہے اور درخواست ہے کہ اب جبکہ ہم یہاں بہت کچھ کر چکے ہیں، ہمارا اسکول اور مدرسہ کسی نہ کسی طرح چل رہا ہے، یہاں کے لوگوں کی سوچ میں کچھ تبدیلی آرہی ہے توایسے موقع پر ہمارا ساتھ نہ چھوڑیں. ہم کو نہ بھولیں، کسی بھی مجبوری یا ضرورت کو نہ سوچیں میری مدد کریں، ٹیم آشیانہ کی مدد کریں، یہاں کے لوگوں کی مدد کریں. میں زیادہ تو نہیں کہتا مگر یہ یقین دلاتا ہوں کے روز حشر انشا الله آپ کو شرمندہ نہیں ہونا پڑے گا. الله پاک ہم سب کو صبر، حوصلہ و استقامت عطا فرماۓ.

تمام دوستوں، ساتھیوں اور پڑھنے والے بھائی، بہنوں کو میری (عدنان) اور ٹیم آشیانہ کی جانب سے اسلام و علیکم.

الله پاک ہم پر، پاکستان پر اور آپ سب پر اپنا خصوصی فضل و کرم فرماۓ - آمین.
 جزاک الله 
آپ کا بھائی، آپ کا دوست 
سید عدنان علی نقوی 
آشیانہ کیمپ، شمالی وزیرستان 
              

Sunday, November 11, 2012

شمالی وزیرستان سےعدنان بھائی کا پیغام (٥ نومبر ٢٠١٢):



 شمالی وزیرستان سےعدنان بھائی کا پیغام (٥ نومبر ٢٠١٢):

محترم دوستوں اور ساتھیوں،
اسلام و علیکم 
الله پاک کا حضور دعاگو ہوں کے الله پاک آپ اور ہم سب پر اپنا رحم و کرم فرماۓ - آمین. 
مجھے اور میرے ساتھیوں کو آشیانہ کیمپ، شمالی وزیرستان قائم کیے ہوۓ ٢ برس سے زیادہ ہو گئے ہیں اور ان دنوں میں ہم نہیں یہاں بہت کچھ پایا اور کھویا. میں نیں اپنی زندگی کے مشکل ترین دن یہاں گزارے، ہر طرح کے حالات کا سامنا کیا، اور الله نے مجھ کو ہمت دی، صبر دیا، استقامت عطا فرمائی، اور ابھی تک میں یہاں موجود ہوں. میں جو مقصد لے کر یہاں آیا تھا وو صرف اور صرف انسانیت کی خدمت کرنا تھا. الله پاک کا شکر اور احسان ہے کہ میں اپنی حثیت اور بساط کے مطابق جوکچھ کر سکتا تھا کیا. آج ٥ نومبر ٢٠١٢ کے دن جب میں ماضی میں دیکھتا ہوں تو سب کچھ ایک خواب کی طرح لگتا ہے. پاکستان کا ایسا علاقہ جہاں کا نام سن کر ہی لوگوں میں دہشت اور بربریت کا احساس جاگ اٹھتا ہے. جہاں کہ رہنے والے لوگوں کو ساری دنیا میں اچھی نظروں سے نہیں دیکھا جاتا. جہاں آج تک کوئی پاکستانی فلاحی ادارہ کام نہیں کر سکا. غرض ہر طرح کی مشکلات سے بھرا ہوا علاقہ جہاں کا نام ہی دہشت کی علامت سمجھا جاتا ہے میں ہم نے وہ فلاحی کم کرے جو پہلے نہی ہو سکے. ہزاروں لوگوں میں ٢ برسوں سے غذائی اجناس کی تقسیم، مفت طبی کیمپ (فری میڈیکل کیمپ)، آشیانہ اسکول اور مدرسہ (دتہ خیل)، بچوں اور خواتین میں کپڑوں کی تفسیم اور بہت کچھ کرا، مگر اتنا کچھ کرنے کے باوجود میں خود کو کامیاب نہی سمجھتا. میں یہاں کے لوگوں کی سوچ کو تبدیل نہی کر سکا، میں یہاں کے بچوں میں تعلیم کا شعور بیدار نہی کر سکا، میں یہاں کے لوگوں میں پاکستان سے محبت اور اسلام کا حقیقی تصور واضح نہی کر سکا اور بہت کچھ نہی کر سکا جو میں کرنا چاہتا تھا اور کرنا چاہتا ہوں. کیوں کہ میں یہاں اکیلا ہوں، تنہا ہوں، محدود ہوں، چاہ کر بھی بہت کچھ نہیں کر پا رہا ہوں. وجہہ صرف فنڈز یا عطیات کی کمی ہی نہیں اپنوں کی غیر ذمہ داری بھی ہے. میں تن تنہا یہاں کچھ بھی نہی کر سکتا. مجھ کو ساتھ چاہیے مجھ کو پاکستان کا ساتھ چاہیے، پاکستان کے لوگوں کا ساتھ چاہیے، مسلمانوں کا ساتھ چاہیے، مجھ کو یہاں لوگوں کی ضرورت ہے جو تعلیم یافتہ ہوں، اخلاقی قدروں واقف ہوں، اسلامی تعلیمات سی واقف ہوں، یہاں (شمالی وزیرستان) کی تہذیب و تمدن سے آشنا ہوں، ایسے لوگ جو کچھ وقت کے لئے یہاں آکر یہاں کے لوگوں کے درمیان رہ کر یہاں کے لوگوں سے دوستانہ روابط قائم کر سکیں، یہاں کے لوگوں کے ساتھ رہتے ہووے یہاں کے لوگوں میں جدید دنیا کے بارے میں معلومات فراہم کر سکیں، یہاں کے بچوں میں تعلیم کا شعور اجاگر کر سکیں. یہاں فلاحی کام کر سکیں، یہاں کے لوگوں میں پاکستا اور پاکستانیت کو اجاگر کر سکیں، اسلام کیا ہے اسس کا صحیح تصور دے سکیں، یہ سب میں اکیلا نہیں کر سکتا. میں اپنی پوری کوشش کر رہا ہوں کہ جبہ تک ممکن ہو یہاں رہو اور یہاں کے لوگوں کی لئے فلاحی خدمات سر انجام دے سکوں مگر زیادہ نہیں کر سکتا
میں اپنی مدد (جو بہت محدود ہوتی ہے) سے یہاں کے لوگوں کو مزید محکوم نہیں بنانا چاہتا، میں یہاں کے لوگوں کو ہمیشہ کے لئے فقیر یا بھوکا نہیں  رکھنا چاہتا.میں یہ چاہتا ہوں کہ یہاں کے لوگ اپنے پیروں پر خود کھڑے ہوں، یہاں کے لوگ اپنے لئے اور اپنے گھر والوں کے لئے خود روزی روزگار کا بندوبست کریں پاکستان کے دیگر علاقوں کی طرح یہاں کے لوگوں کو بھی زیادہ نہیں تو کچھ طبی (میڈیکل) سہولیات مل سکیں، یہاں کے بچے بھی اسکول جائیں اور منفی سوچ کا شکار نہ ہوں، یہاں کی خواتین کو بھی اپنی بات کہنے اور اپنی زندگی جینے کا موقع میل یہ سب اسی وقت ممکن ہے جب ہم سب (سارا پاکستان) مل کر یہاں کے لوگوں کے ساتھ کم کرے یہاں کے لوگوں کو اپنائے، یہاں کے لوگوں کی تہذیب، کردار اور معاشرے کو سمجھنے کی کوشش کرے اور یہاں کے لوگوں کے ساتھ دوستانہ روابط قائم کیے جائیں. اگر ہم یہاں کے لوگوں سے ڈرتے رہیں اور یہاں کے لوگ ہم کو غیر سمجھتے رہیں گےتو ہم کبھی اس علاقے میں امن قائم نہی کر سکیں گے کبھی شمالی وزیرستان کے لوگ پاکستان کو اپنا نہیں سمجھ سکیں گے. 
میں ایک فلاحی کارکن ہوں، خود کو یہاں کے لوگوں کا خادم سمجھتا ہوں، اپنی سوچ یہاں کے لوگوں پر کبھی بھی مسلط نہی کر سکتا. کسی بھی حال میں یہاں کے لوگوں کی سوچ کے مخالف کم نہیں کر سکتا. مگر اپنے عمل اور کردار سے پوری کوشش کرتا ہوں کہ یہاں کے لوگوں کو متاثر کر سکوں، یہاں کے لوگوں کے لئے میں ایک پاکستانی ہوں. اور ایک پاکستانی کی حثیت سے میں پاکستان کا حقیقی تصور قائم کرنے کی پوری کوشش کر رہا ہوں، کتنا کامیاب ہوا ہوں اس کا اندازہ تو کوئی یہاں آکر ہی لگا سکتا ہے. 
یہاں کسی ایک قبیلے یا گروپ کی حکومت قائم نہیں جہاں جہاں جس کا زور چلتا ہے سرکار اسی کی ہوتی ہے مگر الله پاک کے فضل و کرم سے ابھی تک میری ذات سے یہاں کسی کو کوئی شکایات نہی ہوئی ہے. نہ ہی مجھ کو کوئی شکایات، سوچ الگ الگ ضرور ہو سکتی ہے مگر مقصد میں میں صرف ایک فلاحی کارکن ہوں اور شاید اسی وجہہ سے آج تک یہاں موجود ہوں. بہت کوشش کری گئی کے میں اپنا کیمپ یہاں سی کہی اور منتقل کر دوں، مجھ کو بھی بہت طرح کے دباؤ کا سامنا کرنا پر مگر الله پاک کے کرم سے ابھی تک میں یہاں ہوں. الله پاک کے اس احسان کے لئے میں اپنے رب کا جتنا بھی شکر ادا کروں کم ہوگا.
اس تحریر کو لکھتے وقت میرے ذہن میں بہت باتیں موجود ہیں. مگر یہ صرف میرے ذہن کی باتیں ہی ہیں اور میں کسی بھی دوسری بات کی وجہہ سے اپنے فلاحی کم میں کوتاہی نہیں کرنا چاہتا. 
میری تمام ساتھیوں اور دوستوں سے گزارش ہے کے میرے لئے اور میرے ساتھ جو یہاں (شمالی وزیرستان) میں فلاحی خدمات سر انجام دے رہے ہیں کے لئے اور آشیانہ کیمپ میں مقیم وزیرستانی بھائی، بہنوں اور بچوں کے لئے دعا کریں کہ الله پاک ہم کو ثابت قدم رکھے. ہم کو ایک سچا اور اچھا مسلمان بننے کی توفیق عطا فرماۓ. یہاں کے لوگوں کی مشکلات کو آسان کرے اور ہم کو پوری سچی محنت اور لگن کے ساتھ فلاحی خدمات سر انجام دینے کی توفیق عطا فرماۓ - آمین.

انشا الله بہت جلد ایک اور بھیک مشن کے سلسلے میں پشاور، راولپنڈی اور لاہور آنے کا ارادہ ہے. الله پاک کامیاب کرے. آمین.

جزاک الله 
پاکستان زندہ باد 
سید عدنان علی نقوی
دتہ خیل، شمالی وزیرستان.
               
 

Tuesday, November 06, 2012

(Reminder) An Appeal for the Victimc and IDP's of North Waziristan (Reminder)

Dear friends and members of Team Ashiyana.
اسلام و علیکم 

This is an urgent request fro mall of the friends and volunteer's / member's of Team Ashiyana that We need the following items urgently to save the humanty in North Waziristan,
1- Warm clothes (for both children and women) in all sizes (used  or    new),
2- Raw food stuff (in huge quantity),
3- Medicines (for fever and diseases of cold season)
4- Drinking water (In huge quantity) 

Dear all, 
We are already lend a lot of the thing on credit basis from Rawalpindi and Peshawar.
We don't have money or resources at the moment to get the things as above mentioned.

You are all requesting to give us a hand of courage with your help and assistance as soon as you could be.

May Almighty ALLAH gives you Ajr-e-Azeem for your efforts and aid - Ameen.

Jazak ALLAH Kher
Syed Adnan Ali Naqvi
Member Team Ashiyana (North Waziristan)
Ashiyana Camp, Datta Khel, North Waziristan.

Note:
To contact us please use the following email's or visit us (if possible)

team.ashiyana@gmail.com
s_adnan_ali_naqvi@yahoo.ca
faryal.zehra@gmail.com

Or send us a text message:
+92 345 297 1618

Or for online help: 
  Ashiyana”
Ms. Badar un Nissa.
A/c # 0100-34780-0.
United Bank Limited.
Gulistan e Joher Branch. (1921)
Karachi, Pakistan.
Swift Code: UNILPKKA
     
 

Thursday, November 01, 2012

آشیانہ کیمپ: دتہ خیل، شمالی ویرستان سے

محترم دوستوں اور ساتھیوں، 
اسلام و علیکم،

ٹیم آشیانہ (شمالی وزیرستان) کی جانب سے کی جانے والی اپیل پر ہمارے کچھ دوستوں اور ساتھیوں نے ہم سے رابطہ کیا اور ہماری ہر ممکن مدد کی یقین دہانی کرائی جس کے لئے ہم تمام دوستوں اور ساتھیوں کے شکر گزار ہیں اور الله پاک کے حضور دعا گو ہیں کہ الله پاک آپ کو اجر عظیم عطا فرماۓ، آمین.

یہاں (دتہ خیل، شمالی وزیرستان) میں سردیاں بڑھتی جا رہی ہیں اور آشیانہ کیمپ میں مقیم ٹیم آشیانہ کے کارکنان اور ہمارے وزیرستانی بھائی، بہن اور بچے ابھی تک گرم کپڑوں کی سہولت سے محروم ہیں. سردی سے بچاؤ کے ناکافی انتظام کی وجہہ سے مختلف قسم کی بیماریاں جنم لے رہی ہیں جن کے علاج کی سہولیات موجود نہیں.

الله پاک ہم سب کو ان مشکل حالات کا سامنا کرنے اور ان سے نبرد آزما رہنے کو ہمت اور توفیق عطا فرماۓ - آمین.

آپ سب کی دعاؤں، مدد اور ہمت دینے کا بہت بہت شکریہ. 

جزاک الله 
ٹیم آشیانہ 
آشیانہ کیمپ، دتہ خیل،  شمالی وزیرستان